نبی کریم ﷺ کی سیرت مشعل راہ ہے

صحابہ کرام رضی اللہ عنھم اجمعین نے اس قدر احتیاط اور احسن پیرائے میں آپ ﷺ کی ہر ہر ادا کو اپنے ذہنوں پہ نقش کیا اور دلوں میں اتارا کہ عقل دنگ رہ جاتی ہے۔

سیدنا علی رضی اللہ عنہ نے سواری پر سوار ہونے کے لئے اپنا پاؤں رکاب میں ڈال لیا تو (سفر کی) دعا پڑھی، پھر آپ رضی اللہ عنہ ہنسے۔

آپ سے کہا گیا: اے امیر المومنین! آپ کس بات پر ہنسے ہیں؟

تو علی رضی اللہ عنہ نے فرمایا:

میں نے رسول اللہ ﷺ کو دیکھا تھا کہ

آپ(ﷺ) نے ایسے ہی کیا تھا جیسے میں نے کیا ہے اور

آپ(ﷺ) ہنسے (بھی) تھے۔

دیکھئے سنن ابی داود: ۲۶۰۲ و صححہ ابن حبان: ۲۳۸۰۔ ۲۳۸۱ والحاکم ۲/ ۹۸۔۹۹

رحمتِ دو عالم ﷺ کی سیرتِ طیبہ ہر انسان کے لئے مشعل راہ ہے اور اسی میں دنیا و آخرت کی کامیاب و کامرانی مضمر ہے۔ نبی کریم ﷺ کی سیرت بالکل محفوظ ہے جو زندگی کے ہر گوشے کو محیط ہے۔

تفصیل کے لئے دیکھئے شیخ زبیر علی زئی رحمہ اللہ کی تحقیق میں ’’شمائل ترمذی‘‘ صفحہ 11 ’’حرف أول‘‘

 

جواب دیں

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s