فقہ ابن مسعود رضی اللہ عنہ میں سے دو اہم مسئلے

اوّل: سیدنا ابن مسعود رضی اللہ عنہ نے فرمایا: آسمانِ دنیا اور قریب والے آسمان کے درمیان پانچ سو سال کا فاصلہ ہے اور ہر دو آسمانوں کے درمیان پانچ سو سال کا فاصلہ ہے۔ ساتویں آسمان اور کرسی کے درمیان پانچ سو سال کا فاصلہ ہے۔ کرسی اور پانی کے درمیان پانچ سو سال …

جاری رکھئیے پڑھنا فقہ ابن مسعود رضی اللہ عنہ میں سے دو اہم مسئلے

سیرت رحمۃ للعالمین ﷺ کے چند پہلو

نام و نسب: سیدنا ابو القاسم محمد بن عبداللہ بن عبدالمطلب (شیبہ) بن ہاشم (عمرو) بن عبدمناف (المغیرۃ) بن قصی (زید) بن کلاب بن مُرۃ بن کعب بن لؤی بن غالب بن فہر بن مالک بن النضر بن کنانہ بن خزیمہ بن مدرکہ (عامر) بن الیاس بن مضر بن نزار بن معدّ بن عدنان من …

جاری رکھئیے پڑھنا سیرت رحمۃ للعالمین ﷺ کے چند پہلو

میں تمھارے درمیان وہ چیز چھوڑ کر جا رہا ہوں، اگر تم نے اسے پکڑا تو کبھی گمراہ نہیں ہو گے

(سیدنا) علی (بن ابی طالب) رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ بے شک نبی ﷺ (مقامِ) خُم میں ایک درخت کے پاس آئے۔ پھر علی رضی اللہ عنہ کا ہاتھ پکڑ کر باہر تشریف لے آئے، فرمایا: کیا تم اس کی گواہی نہیں دیتے کہ اللہ تعالیٰ تمھارا رب ہے؟ لوگوں نے کہا: جی …

جاری رکھئیے پڑھنا میں تمھارے درمیان وہ چیز چھوڑ کر جا رہا ہوں، اگر تم نے اسے پکڑا تو کبھی گمراہ نہیں ہو گے

سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ کی فقہ میں سے دو اہم مسئلے

اوّل: سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ نے فاتحہ خلف الامام کے بارے میں اپنے ایک شاگرد سے فرمایا: ’’اقرأ بھا في نفسک‘‘ اسے اپنے دل میں (سراً) پڑھو۔ (صحیح مسلم:۳۹۵) سائل نے پوچھا:جب امام جہری قراءت کررہا ہو تو کیا کروں؟ انھوں نے فرمایا: اسے اپنے دل میں (سراً) پڑھو۔ (جزء القراءۃ للبخاری:۷۳ وسندہ …

جاری رکھئیے پڑھنا سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ کی فقہ میں سے دو اہم مسئلے

اللہ تعالیٰ ہمارے دلوں میں علمائے حق کی محبت بھر دے

ارشادِ باری تعالیٰ ہے: تم میں سے ایمان والوں اور علم والوں کے درجے، اللہ بلند فرمائے گا۔ (المجادلۃ:۱۱) معلوم ہوا کہ اہل ایمان علماء (علمائے حق) کو عام مومنین ومسلمین پر برتری و فضیلت حاصل ہے۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا: اللہ سے اس کے بندوں میں صرف علماء ہی (سب سے زیادہ) ڈرتے ہیں۔ …

جاری رکھئیے پڑھنا اللہ تعالیٰ ہمارے دلوں میں علمائے حق کی محبت بھر دے

جنت والدین کے قدموں کے نیچے ہے

(سیدنا) معاویہ بن جاہمہ رضی اللہ عنہ بیان فرماتے ہیں کہ میرے باپ (سیدنا) جاہمہ رضی اللہ عنہ رسول اللہ ﷺ کے پاس آئے اور آپ سے سوال کیا کہ اے اللہ کے رسول! میں جہاد میں جانے کا ارادہ رکھتا ہوں اور آپ سے مشورہ لینے آیا ہوں۔ آپ ﷺ نے فرمایا: ’’کیا تیری …

جاری رکھئیے پڑھنا جنت والدین کے قدموں کے نیچے ہے

ننگے سر رہنا کیسا ہے؟

تحریر: ڈاکٹر ابو جابر عبداللہ دامانوی حفظہ اللہ نمبر 1: سیدنا عمرو بن حریث رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ نبی ﷺ نے خطبہ ارشاد فرمایا اور آپ کے سر پر سیاہ رنگ کا عمامہ تھا اور آپ نے اس کے دونوں سرے دونوں کندھوں کے درمیان چھوڑے ہوئے تھے۔ (مسلم:۱۳۵۹، دارالسلام:۳۳۱۲) نمبر 2: …

جاری رکھئیے پڑھنا ننگے سر رہنا کیسا ہے؟